showcase demo picture

ارجنٹم نائٹریکم: part-1


ارجنٹم نائٹریکم: part-1
نائٹریٹ آف سلور
ڈاکٹر بنارس خان اعوان، واہ کینٹ
ڈاکٹر ملک مسعود یحیےٰ
تلخیص و ترجمہ جارج وتھالکس۔
حسد اور ہومیوپیتھی
ذہنی جذباتی علامات:

* اپنی صحت کی بابت شدید پریشانی۔ موت کا خوف
* مراق
* دماغ مخصوص خیالات پر اڑجاتا ہے۔ ان پر قابو نہیں پاسکتا نہ ہی ان خیالات کو دماغ میں آنے سے روک سکتا ہے۔
* بلندیوں کا خوف۔ ہجوم کا خوف۔ پل کراس کرنے سے خوف
* تنگ جگہوں کا خوف۔ بند جگہوں کا خوف
* پیش بینی اضطراب اسہال کا پیش خیمہ ہوتا ہے
* بار بار پیشاب
* خارجی اشیاء سے دلچسپی کا رجحان
* اپنے محسوسات دو ٹوک الفاظ میں بیان کرے
جسمانی علامات:
* آنکھوں کی دانہ دار سوزش۔ ایک جگہ پرقرمزی سرخ رنگ جیسے کہ خام گوشت
* نگلتے وقت حلق میں کھپچی چُبھی ہونے کا احساس
* زور دار ڈکار اور ریاح مشین گن کی مانند
* ریاحی تکالیف کے ہمراہ شکم میں انتفاخ
* شکر یا مصری کی بنی اشیاء کھانے کے بعد اسہال
عمومیات:
* مٹھائیوں کی خواہش۔ شکر، نمک کی خواہش
* جب اوپر لیا ہوا کپڑا اتارے تو سردی محسوس ہو لیکن اگر کپڑا لپیٹ لے تو دم کشی ہو
* گرمی سے اضافہ
* مٹھائیوں سے اضافہ
جھت:
اضافہ
* گرمی سے
* مٹھائیوں سے
* غیر ضروری دماغی ورزش سے
جی وی۔ اگر آپ میٹیریا میڈیکا میں دیکھیں اور صرف الفاظ پڑھیں تو آپ کو پتہ چلے گا کہ ارجنٹم نائٹریکم اور ایکو نائٹ میں ذرا بھی فرق نہیں ہے۔
اپنی صحت کی بابت کڑا اضطراب، موت کا خوف، مراق، بلندیوں کا خوف (بلند عمارتوں کا خوف)، ہجوم کا خوف، تنگ جگہوں کا خوف، بند جگہوں کا خوف، پل کراس کرنے سے خوف وغیرہ۔
لیکن ارجنٹم نائٹریکم کے خوف و دہشت زدگی کے حملے ایکو نائٹ کے خوف و دہشت زدگی کے حملوں سے بالکل مختلف ہوتے ہیں۔ آپ اپنی دلچسپی کیلئے ان میں فرق کا ادراک کیسے کریں گے؟ کون سے حقیقی اختلاف موجود ہیں؟
خوف و ہراس اور اضطراب کے حملے دونوں ہی مکمل طور پر مختلف ہیں کیونکہ ارجنٹم نائٹریکم جب ایک بار مضطربانہ حالت میں پہنچ جاتا ہے تو مسلسل اسی حالت میں رہتا ہے۔ ذہنی پریشانی اور خوف۔ موت کا خوف، کینسر ہوجانے کا خوف، دل کے دورے کا خوف یا کسی بھی مرض کا خوف۔ لیکن ارجنٹم نائٹریکم کے مریض کا کردار ایکو نائٹ کے مریض کے کردار سے بہت مختلف ہے۔
ارجنٹم نائٹریکم کے مریض حد سے بڑھ کر مائل بہ گفتگو ہوتے ہیں۔ وہ بہت آسانی سے اپنے خوف ظاہر کردیتے ہیں۔ اپنے جذبات ظاہر کردیتے ہیں۔ یہ مریض ہچکچاتے نہیں ہیں نہ ہی رکاوٹ محسوس کرتے ہیں اور جب جذبات ابھرتے ہیں تو ان کا اظہار ضروری ہوتا ہے۔
ارجنٹم نائٹریکم کے مریض صاف گو اور سادہ دل ہوتے ہیں یہ افراد اپنے احساسات کو زیادہ دیر تک چھپا نہیں سکتے۔
آئیں دیکھیں کہ خوف و دہشت کے حملوں میں کیا ہوتا ہے۔ پیتھالوجی دیکھتے ہیں۔ ارجنٹم نائٹریکم کی مکمل تصویر ارجنٹم نائٹریکم جذباتی ہے۔ اسے جذبات کا اظہار کرنا ہے۔ کیا ہوگا جس لمحے وہ مضطرب ہوتا ہے تو وہ دوسرے فرد سے رابطہ کرتا ہے، گفتگو کرتا ہے اور اسے دوسرے فرد سے مکرر یقین دہانی کی ضرورت ہوتی ہے۔ اسے حوصلے اور خود اعتمادی کی بحالی کی ضرورت ہے۔
ارجنٹم نائٹریکم کے کہنے کا ایک طریقہ ہے جس پر یقین کیا جاسکتا ہے اور یہ طریقہ ایک حد تک غیر معاشرتی ہوتا ہے۔ میں آپ کو اس کی ایک مثال دیتا ہوں۔ مجھے ایک مریضہ یاد ہے جس کو پستان کے کینسر کا خوف تھا۔ اس نے کہا میں کسی سے بھی پوچھ سکتی ہوں۔ میں ایک بار خوف و دہشت کی حالت میں تھی مجھے ڈھارس کی ضرورت تھی وہ بولتی گئی ایک دن گلی میں مجھے ایک دودھ والا مل گیا تو اس نے گلی میں اپنا پستان نکالا اور دودھ والے سے پوچھا کہ کیا اسے میرے پستان میں کینسر ترقی کرتا نظر آتا ہے (حاضرین کا قہقہہ)۔ آپ تصور کریں کہ ایک عورت آپ کے پاس گلی میں آئے اور کہے کہ براہ کرم میرا معائنہ کریں۔ مریضہ بالکل پرواہ نہیں کرتی کہ اس کے ارد گرد کیا ہورہا ہے۔ لوگ دیکھ رہے ہیں یا نہیں۔ اگر لوگ سوچ رہے ہیں کیا ہورہا ہے۔
مریضہ اس ترنگ کو روک نہیں سکتی وہ اتنی جذباتی ہوتی ہے۔ وہ ایک بار آپ کو بتادے گی ایک بار جب وہ آپ کو تصور دے دے گی۔ فوری طور پر اپنے خوف کا اظہار کردے گی مجھے اظہار کرنے کی ضرورت ہے۔ تب آپ کے ذہن میں ارجئٹم نائٹریکم کا خیال آتا ہے۔
ارجنٹم نائٹریکم مراقی ادویات میں سے ایک دوا ہے۔ مراقی پن کیا ہے؟ سوداوی مزاج۔ ہر وقت یہ سوچے کہ مجھے کینسر ہوجائے گا، میں مرجاؤں گا، مجھے دل کا دورہ پڑے گا، مجھے سکتہ ہوجائے گا، میرے سر میں خون رس جائے گا یا جو کچھ بھی۔
ارجنٹم نائٹریکم کے مریض کا اپنی صحت کی بابت اضطراب ممکن ہے انوکھی حدوں کو چھونے لگے۔ جب وہ اکیلا ہو تو آسانی سے خوف و ہراس کا شکار ہوسکتا ہے اور اس کا جسم لرزتا ہے۔ مریض ہکلاتا ہے، بڑبڑاتا ہے۔ حتیٰ کہ اینٹھتا ہے۔ اکثر اوقات بحرانی کیفیت میں بار بار پاخانہ آتا ہے یا اسہال آنے لگتے ہیں۔ مریض پر ناقابل بیان خوف چھا جاتا ہے اور مریض دماغی طور پر ہار مان لیتا ہے۔
اس مرحلے پر ممکن ہے مریض بسا اوقات یہ سوچے کہ کوئی منحوس قوت اس پر اثر انداز ہورہی ہے۔ مریض سادہ لوح ہوتاہے۔ اپنی صحت کی بابت ہر ایرے غیرے کی رائے مان لیتا ہے۔ اسے اختلاج قلب ہونے لگتا ہے اور اسے یقین ہوجاتا ہے کہ اس کو دل کا دورہ پڑنے والا ہے۔ جوں ہی دل کی دھڑکن تیز ہوتی ہے اس کی سوچ منجمند ہوجاتی ہے۔ میرے خدا یہ کیا ہورہا ہے؟ یوں محسوس ہوتا ہے کہ اس کی علامات اس کے تصور میں ڈرامائی طور پر حد سے تجاوز کرجاتی ہیں۔ اگرچہ وہ اپنی زندگی میں ایک سرگرم کاروباری فرد رہا ہو۔ وہ اس اعصابیت کی حالت میں اپنی عقل استعمال نہیں کرسکتا وہ بس ان کے قبضے میں چلا جاتا ہے۔
آپ اپنے تشخیصی کمرے میں بیٹھے ہیں مریض آتا ہے اور ایک دھیمے لہجے میں آپ سے مخاطب ہوتا ہے کہ مجھے موت سے خوف آتا ہے۔ جب ایک مریض اس طرح سے ابتدا کرے تو یہ آپ کی سردردی ہے کہ آپ فرق محسوس کرلیں۔ مجھ پر خوف وہراس کا حملہ ہوتا ہے، میں خوف و دہشت میں مبتلا ہوں۔ جب مریض اس طرح سے ابتدا کرے تو آپ کا فرض منصبی ہے کہ آپ مریض کے خوف وہراس کے حملے کی گہرائی اور اس کے اظہار کا مقصد سمجھ لیں۔
جاری ہے ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔

Posted in: Uncategorized, Urdu
Return to Previous Page

Comments:

ارجنٹم نائٹریکم: part-1

    Anonymous
    Commented:  March 17, 2018 at 12:34 PM

    bohat zabardust
    argentum nit k patient ko har kaam ki jaaldi b bohat rahti hay

    Reply

Leave a Reply

Your email address will not be published.

Theme Features

Welcome to the Zen Theme which is best used for personal blogging. Here is a list of some of the special features you will be able to take advantage of when customizing your website and blog:
  • Theme Control panel
  • Customize colours, layout, buttons, and more
  • Dynamic widgets with varied widths
  • Up to 8 Widget Positions
  • Built-in Social Networking
  • Google Fonts for Headings and site title
  • and a lot more...

Relax With Herbal Teas

When enjoying your moment of zen, it's best to enjoy fresh herbal teas for relaxation. Of course, choosing the right zen teas requires the expertise of asian herbalists.

Recent Posts

Check out the recent articles posted here at Zen and keep up to date with the latest news and information about having a zen lifestyle.