showcase demo picture

(خطاب) اسلامیہ یونیورسٹی ، بھاول پور 30th April, 2016

ڈاکٹر بنارس خان اعوان، جنرل سیکریٹری، سوسائٹی آف آف ہومیوپیتھس، پاکستان
محترم ڈاکٹر سعید احمد صاحب، پرنسپل، میڈم لیلیٰ ثمرین، میرے دوست محترم ڈاکٹر سرور صاحب اور آج کے سیمینار کی انتظامیہ
معزز ڈاکٹر حضرات اور سٹوڈنٹس
میرے لیے بڑے اعزاز کی بات ہے کہ مجھے دوسری بار اس پلیٹ فارم پر آپ کے سامنے پیش ہونے کا موقع ملا ہے۔ ہومیوپیتھی Cause کو آگے بڑھانے اور اس پروفیشن کو اس کا گم گشتہ وقار واپس لانے پر IUB کا کردار قابلِ تحسین ہے اور اس کی جتنی بھی تعریف کی جائے کم ہے۔ہومیوپیتھی میں پڑھے لکھے طبقے کی شدید ضرورت ہے ۔مجھے یقین ہے کہ اس نوبل ادارے سے تعلیم یافتہ بچے جب مکمل خوداعتمادی سے عملی دنیا میں قدم رکھیں گے تو نہ صرف کامیابی سے ہمکنار ہوں گے بلکہ ہومیوپیتھی اور اس ادارے کا بھی نام روشن کریں گے۔ کیونکہ میں سمجھتا ہوں، یہی چراغ جلیں گے تو روشنی ہو گی۔اگر آپ میرے لیکچرزاور آرٹیکلز پر غور کریں تو میرا فوکس یہی نوجوان نسل ہوتی ہے۔
میں آپ سے عرض کروں کہ گزشتہ بیس سالوں سے میرا، پاکستان کے مختلف شہروں قصبوں اور کالجوں میں لیکچرز ڈیلیور کرنے اور سیمینارز ورکشاپس اٹینڈ کرنے کا سلسلہ جاری ہے۔اس دوران لاتعداد کلینکس وزٹ کرنے اور ہومیوپیتھس سے تبادلہ خیالات کرنے کا موقع ملا ہے۔میں نے کامیاب ہومیوپیتھس بھی دیکھے اور ناکام بھی۔ایسے بھی جن کی
daily income five digits
اور Monthly income six digits میں ہے۔ اور ایسے بھی جن کا دکان کا کرایہ مشکل سے نکلتا ہے۔ میں نے فیس بک پر تفصیلی ان باتوں کا ذکر کیا ہے۔ آپ میں جو ساتھی میرے ساتھ add ہیں بخوبی جانتے ہیں۔مقصد بات کرنے کا یہ ہے کہ میں آپ کو ان راستوں کی نشان دہی کروں جو میں سمجھا ہوں، جو کامیابی و کامرانی کی طرف جاتے ہیں۔وہ راستے جن پر ہم سے پہلے آنے والے چلے، جنہوں نے اصول و ضوابط کی پابندی کی ، جنہوں نے نیک نامی کمائی، جنہوں نے ہومیوپیتھی تاریخ میں اپنا نام زندہ رکھا اورآج ہم عزت و احترام سے ان کا ذکر کرتے ہیں۔
ہمارا لمیہ ہے کہ ہمارے بچوں کو جب وہ ڈگری ڈپلومہ لے کر عملی دنیا میں آتے ہیں تو انہیں سب سے بڑی مشکل یہ پیش آتی ہے کہ مارکیٹ میں کوئی انہیں گائیڈ کرنے والا نہیں ہوتا ۔Internship کا کوئی اچھا ماحول نہیں۔میں چاہتا ہوں کہ جب آپ اپنے کلینک پر بیٹھیں تو مکمل خود اعتمادی سے پریکٹس کریں۔
میرے پاس ایک سال کے لیے بارہ comprenhensive lectures کا پروگرام ہے، اگر IUB Management agree کرے تو وہ میں Monthly basis پر آپ سے Share کر سکتا ہوں۔
ان میں پولی کریسٹ ریمیڈیز ہیں، فلاسفی ہے،
understanding of Miasms ہے،
Understanding of Rubrics ہے
understanding & utilisation of computer soft ware Radar ہے۔اور سب سے بڑھ
Case taking technics اور Live case taking ہیں۔
ہم آپ کے سامنے لائیو کیس ٹیکنگ کریں گے تاکہ آپ تھیوری کو پریکٹیکل میں ڈھلتا دیکھ سکیں۔میں نے سیکڑوں کی تعداد میں سیمینارز اٹینڈ کیے لیکن لائیو کیس ٹیکنگ سوائے جارج وتھالکس کے اور کہیں دیکھنے کو نہیں ملی۔
میں چاہتا ہوں کہ جب آپ اپنے کلینک پر بیٹھیں تو مکمل خود اعتمادی سے پریکٹس کریں۔
کیونکہ دماغ کے ساتھ دل کا دروازہ بھی کھلا رکھنا ضروری ہے۔ یاد رکھییے ، ہومیوپیتھی جاننے ، یاد کرنے یا رٹا لگانے کا نام نہیں ہے۔ اسے تو سمجھنا ہے، اس کا ادراک کرنا ہے اسے Perceive کرنا ہے۔
البرٹ آئن سٹائن نے کہا،
.147Any fool can know. The point is to understand.148

اس سے پہلے کہ ہم اپنے Topic کی طرف آئیں، کیا آپ جانتے ہیں کہ ہومیوپیتھک پریکٹس میں سب سے مشکل کام کون سا ہے؟
آئیے دیکھتے ہیں۔۔۔۔۔

Posted in: Urdu
Return to Previous Page

4 Responses to (خطاب) اسلامیہ یونیورسٹی ، بھاول پور 30th April, 2016

    Anonymous
    Commented:  February 7, 2018 at 7:03 PM
    سر میں آپ کی ویب سائیٹ وزٹ کر رہاہوں ۔ مختصر یہ کہ جس طرح پاکستان میں بے لوث ہوکر جو لوگ ہومیو پیتھی کا علم بانٹ رہے رہےہیں ان میں آپ کا نام سر فہرست ہے – میں آپ کا(وٹس ایپ گروپیں) ٹروہومیو لور موبائل سیٹ نہ ہونے کی وجہ سے جائن نہ کر سکا جس کا مجھے بہت افسوس ہے لیکن چند دنوں تک انشااللہ ضرور جائن کر لوں گا – میں نے ہومیوپیتھی کیلئے ایک درد آپ کے اندر محسوس کیا ہے – اور میرے خیال میں جس دل میں درد نہیں وہ دل کہلانے کے لائق ہی نہیں – جب درد ہوتا ہے تو پیار ، محبت اور عشق جیسے جذبات جنم لیتے ہیں- میں آپ کی ہو پوسٹ ہر کامنٹ دیکھتا ہوں- آپکا سکھانےکا سٹائل بہت اعلی ہے – کسی انسان کی منہ پر تعریف کرنا ایسا ہی ہے جیسے اسے الٹی چھری سے ذبح کر رہا ہو- لیکن میرا ایسا کچھ ارادہ نہیں ہے – میں اپنے اندر کے جذبات بیان کر رہاہوں -بہت جلد آپ سے ملاقات ہوگی – آپ کے دور میں زندہ رہ کر آپ سے اقتباس فیض نہ کرنا اپنے آپ سے زیادتی ہوگی – والسلام
    Reply

Leave a Reply to Hussain Kaisrani Cancel reply

Your email address will not be published.

Theme Features

Welcome to the Zen Theme which is best used for personal blogging. Here is a list of some of the special features you will be able to take advantage of when customizing your website and blog:
  • Theme Control panel
  • Customize colours, layout, buttons, and more
  • Dynamic widgets with varied widths
  • Up to 8 Widget Positions
  • Built-in Social Networking
  • Google Fonts for Headings and site title
  • and a lot more...

Relax With Herbal Teas

When enjoying your moment of zen, it's best to enjoy fresh herbal teas for relaxation. Of course, choosing the right zen teas requires the expertise of asian herbalists.

Recent Posts

Check out the recent articles posted here at Zen and keep up to date with the latest news and information about having a zen lifestyle.