showcase demo picture

کتاب(ایک سرجن کا سفر)سے انتخاب(مرزا انور بیگ) (پارٹ ۔27)


متحرم قارئین،ہم آپ کی خدمت میں مشہور ہومیوپیتھک ڈاکٹرمرزا انور بیگ کی کتا ب سے اقتباسات پیش کرتے رہیں گے۔
امید ہے کہ آپ کو پسند آئے گا۔
کتاب(ایک سرجن کا سفر)سے انتخاب(مرزا انور بیگ)
(پارٹ ۔27)
شروع شروع میں ،میں سرکاری نوکری چھوڑنے کے بعدیو کے سے لوٹنے پر جنرل کے طور پر ہرنیا،ہائیڈروسیل کے آپریشن کیا کرتا تھا حالانکہ ممبئی آنے پر پیرجمانا مشکل لگ رہا تھا۔اس لئے سرجیکل سی ایم او کے طور پر کام کرنے لگا۔شارٹ پیرئیڈمیں دو چار گھنٹوں کا جاب ایمرجنسی ڈہوٹی میں مل جایا کرتا تھا۔بعد میں ایک یونانی کالج میں سرجیکل ڈیمانسٹریٹر کے عہدے پر سر گرم رہا۔جو ماڈرن میڈیسن میں ڈیمانسٹریٹر کی پوسٹ تھی۔پھر ایک وقت ایسا آیا کہ میں ایک مشہور سرجیکل سیکولاجسٹ کے طور پر بے حد مقبول ہوااس لئے کے میں نے نئے تجربے کئے تھے۔نئے آپریشن کے طریقے جس سے ایک نا مرد کو بھی مرد بنا دینا۔آدمی تجریوں سے سیکھتا ہے۔میں نے سرجری میں سیکسولاجی کو چنا تھا جس سے پریکٹس تجربہ میں تبدیل ہو گئی اور میں سیکسو لاجی میں ماہر ہو گیا۔اس طرح میں نے ممبئی میں ایک ماہرسیکسولاجسٹ کے طور پر اپنے قدم جما لئے۔ان دنوں عرب سے وہاں کے شیخ ہندوستان آیا کرتے تھے اور موج مستی کے لئے کم سن لڑ کیوں سے نکاح کر تے تھے۔ایک عرب خلیفہ کا قصّہ ہاد آ رہا ہے۔دراصل سعودی عرب یا امارات میں وہاں کی سرکا ریں سنجیدہ مریضوں کے علاج کا پورا خرچ اٹھاتی تھیں۔چاہے علاج کے لئے غیر ممالک ہی کیوں نہ جانا پڑے۔اس وقت میں اوپیرا ہاؤس کے ایک چیمبر میں بیٹھتا تھا۔اس وقت تک مجھے یونانی پیتھی کی خاص جانکاری ہو چکی تھی۔ایلوپیتھ تو تھا ہی مگر اس وقت ہومیوپیتھی کو پہنچاتا نہ تھا۔یہ کہتا چلوں کہ دراصل میں آج بھی ایلوپیتھ ہی ہوں۔ایلوپیتھی طبّ ہے سائنس کے تجربے کا نام۔ہاں تو میں ایک عرب خلیفہ کی بات کر رہا تھا۔دراصل وہ ایک فائیواسٹار ہوٹل میں مع اہل عیال ٹھہرا ہوا تھا۔اس کی ماں کی باتھ روم میں گر جانے سے کولہے کی ہڈی سرک گئی تھی۔میں نے اسے کسی بڑے اسپتال میں شفٹ ہونے کی اصلاح دی۔مگر وہ چاہ رہا تھا ک۹ہ میں ہی اس کا علاج کروں۔میں نے جانچ پرکھ کر اسے ہومیوپیتھی کی کچھ دوائیں دے دیں۔خُدا کا کرنا ایسا ہوا کہ وہ دوا اسے سوٹ کر گئی۔ اور کچھ ہی دنوں میں وہ چلنے پھرنے لگ گئی۔یعنی بنا آپریشن کے وہ ٹھیک ہو گئی۔تو یہ ہے ہومیوپیتھی،دوائیں ایسی تیزی سے کام کرتی ہیں یا نہیں کرتیں۔
ویسے ڈاکٹر کی زندگی ہمیشہ رِسک کی پٹری پر دوڑتی رہتی ہے کیونکہ دوا وغیرہ دینے کے بعد کے کچھ گھنٹے بڑے ٹینشن میں گزرتے ہیں۔ سوتے جاگتے لگی رہتی ہے کہ پتہ نہیں مریض کا کیا ہو گا؟ اس ٹینشن کا اندازہ بہت مشکل ہے۔
کتابت بڑا مشکل مرحلہ ہے۔اس وقت تو یہ اور بھی مشکل تھا جب ہاتھ سے لکھا جاتا تھا قلم کے ذریعے۔اب کمپیوٹر ہے۔اس نے ایک کاتب کی بہت ساری مشکلوں کو ایک حد تک بلکہ بہت حد تک کمک کر دیا ہے۔ہمارے یہ مرزا صاحب اس میں بہت ماہر ہیں وگرنا کتابت ،اُف خدا کی پناہ۔
جاری ہے۔۔۔۔۔

Posted in: Urdu
Return to Previous Page

Leave a Reply

Your email address will not be published.

Theme Features

Welcome to the Zen Theme which is best used for personal blogging. Here is a list of some of the special features you will be able to take advantage of when customizing your website and blog:
  • Theme Control panel
  • Customize colours, layout, buttons, and more
  • Dynamic widgets with varied widths
  • Up to 8 Widget Positions
  • Built-in Social Networking
  • Google Fonts for Headings and site title
  • and a lot more...

Relax With Herbal Teas

When enjoying your moment of zen, it's best to enjoy fresh herbal teas for relaxation. Of course, choosing the right zen teas requires the expertise of asian herbalists.

Recent Posts

Check out the recent articles posted here at Zen and keep up to date with the latest news and information about having a zen lifestyle.